حضرت زینب کبریٰ سلام الله علیہا

Sat, 01/12/2019 - 10:43

رسول خدا صلی الله علیه وآله::میں حاضرین و غائبیں کو وصیت کرتا ہوں کہ اس مولود کا میری خاطر پاس و لحاظ رکھیں،بیشک یہ خدیجۂ  کبری کی طرح ہے۔[خصائص الزینبیه ص60]

حضرت زینب کبری سلام الله علیہا

حضرت زینب کبری سلام الله علیها کی ولادت با سعادت شهر مدینه منوره  میں  پانچویں یا چھٹی ہجری میں ہوئی۔آپ کی کنیت: حضرت اُم المصائب ،  اُم الرَّزايا اور اُم النَوائب ہے…آپ کے القاب بہت زیادہ ہیں من جملہ مندرجہ ذیل القاب کی جانب اشارہ کیا جاسکتا ہے:عقیلة بنی هاشم ، عقيلة الطالبين ، صديقه صغری ،عصمت صغری، ولية اللّه ، الراضية بالقدر و القضاء ، صابرة البلوي من غير جزع و لا شكوي ،امينة اللّه ،عالمة غير معلمة ، فهمة غير مفهمة ، محبوبة المصطفي ، ثانية الزهراء ، الشريفة۔
آپ  سلام الله علیها کی ولادت کے وقت، پیغمبر خدا صلی الله علیه و آله  سفر  پر تھے، امیرالمؤمنین علیه السلام نے آپ کی  نامگذاری کے لیے فرمایا:میں پیغمبر پر  سبقت نہیں کرسکتا،یہاں تک کہ آنحضرت (ص) تشریف لائے اور وحی کے منتظر ہوئے، جبرئيل نازل ہوئے اور عرض کیا:اللہ آپ کو سلام کہتا ہےاور ارشاد فرماتا ہے کہ: اس  دختر کا نام "زینب" رکھیئے ، کیونکہ اس نام کو ہم نے لوح  محفوظ میں تحریر کیا ہے۔
 پیغمبر(ص) نے حضرت زینب سلام الله علیها کو طلب کیا اوربوسہ لیا ،پھر فرمایا:میں حاضرین و غائبیں کو وصیت کرتا ہوں کہ اس مولود کا میری خاطر پاس و لحاظ رکھیں،بیشک یہ خدیجۂ  کبری کی طرح ہے۔
 آپ کے سکون و وقار کو حضرت  حضرت خدیجه کبری سلام الله علیها اورآپ کی عصمت و حیاء کو حضرت فاطمه زهرا سلام الله علیها اور آپ کی بلاغت کو  امیرالمومنین علی مرتضی علیه السلام اورآپ کی  حلم و بردباری کو حضرت حسن مجتبی علیه السلام اورآپ کی قلبی شجاعت و قوت کو  حضرت سیدالشهداء کی طرح مانا گیا ہے۔[ریاحین الشریعه ، ص ۳۸، ۴۶ ،۳۳]

Add new comment

Plain text

  • No HTML tags allowed.
  • Web page addresses and e-mail addresses turn into links automatically.
  • Lines and paragraphs break automatically.
13 + 4 =
Solve this simple math problem and enter the result. E.g. for 1+3, enter 4.
www.welayatnet.com
Online: 42