اگر وضو کرتے ہوئے، ہاتھ گیلی جگہ پر لگ جائے

Tue, 08/07/2018 - 15:55

خلاصہ: اگر وضو کرتے ہوئے، ہاتھ گیلی جگہ پر لگ جائے تو کیا وضو باطل ہوجاتا ہے، کیونکہ وضو والا پانی وضو سے باہر والے پانی کے ساتھ ملاوٹ ہوگیا ہے؟

اگر وضو کرتے ہوئے، ہاتھ گیلی جگہ پر لگ جائے

بسم اللہ الرحمن الرحیم

اگر وضو کرتے ہوئے، ہاتھ گیلی جگہ پر لگ جائے تو کیا وضو باطل ہوجاتا ہے، کیونکہ وضو والا پانی وضو سے باہر والے پانی کے ساتھ ملاوٹ ہوگیا ہے؟
جواب:
آیت اللہ خامنہ ای: اگر ہاتھ اور منہ کو دھوتے وقت ہو تو کوئی حرج نہیں ہے، لیکن اگر بائیں ہاتھ کو دھونے کے بعد ہو اور اسی ہاتھ سے سر یا پاؤں کو مسح کرنا چاہے تو حرج ہے۔
آیت اللہ وحید خراسانی: سر اور پاؤں کا مسح، وضو کے اس پانی سے جو ہتھیلی پر ہے کرنا چاہیے اور اگر ہتھیلی کا پانی کسی اور پانی سے مخلوط اور ملاوٹ ہوجائے تو اس سے مسح کرنا صحیح نہیں ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔
[ماخوذ از: http://www.askahkam.ir]

Add new comment

Plain text

  • No HTML tags allowed.
  • Web page addresses and e-mail addresses turn into links automatically.
  • Lines and paragraphs break automatically.
18 + 2 =
Solve this simple math problem and enter the result. E.g. for 1+3, enter 4.
www.welayatnet.com
Online: 23